894

آپ کی پسندیدہ ٹیم کون سی ہے؟

 

کیا لاہور قلندرز اب بھی پلے آف مرحلے میں جا سکتی ہے؟ ایسی تفصیلات کے فواد رانا خوشی کے مارے ایک مرتبہ پھر میکالم کی ”چُمی“ لے لیں گے
دبئی پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) میں مسلسل 6 شکستوں کے بعد لاہور قلندرز کی ملتان سلطانز کے خلاف پہلی کامیابی کے نتیجے میں ٹورنامنٹ انتہائی دلچسپ صورتحال اختیار کر گیا ہے اور سب لوگ یہ جاننا چاہتے ہیں کہ کیا اب بھی لاہور قلندرز کے اگلے مرحلے میں جانے کے امکانات موجود ہیں؟
شائقین کرکٹ بالخصوص لاہور قلندرز کے مداحوں کیلئے خوشخبری ہے کہ لاہور قلندرز کے اگلے مرحلے میں جانے کے امکانات موجود ہیں اور ٹیم اب بھی ٹورنامنٹ سے مکمل طور پر آﺅٹ نہیں ہوئی۔ پی ایس ایل کے ایلیمنٹری مرحلے میں جانے کیلئے لاہور قلندرز کو اپنے اگلے تمام میچز بڑے مارجن سے جیتنے ہوں گے اور دوسری ٹیموں کے میچز میں اپنے حق میں نتیجے کیلئے دعائیں کرنا ہوں گی۔

پوائنٹس ٹیبل پر لاہور قلندرز 2 پوائنٹس کے ساتھ آخری پوزیشن پر ہے اور اس کے کراچی کنگز، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور پشاور زلمی کے ساتھ تین میچ ہونا ہیں۔اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم پوائنٹس ٹیبل پر 10 پوائنٹس کے ساتھ سر فہرست ہے اور لاہور قلندرز کو ٹورنامنٹ میں زندہ رکھنے کیلئے اسے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دینا ہو گی۔
اسلام آباد یونائیٹڈ کی پشاور زلمی کو شکست کے بعد لاہور قلندرز کے ایلیمینیٹر مرحلے میں جانے کے متوقع دو صورتیں نکلتی ہیں۔ لاہور قلندرز کیلئے پہلی صورت یہ ہو گی کہ ملتان سلطانز کراچی کنگز کو شکست دے، کوئٹہ گلیڈی ایٹرز پشاور زلمی کو ہرا دے، لاہور قلندرز کراچی کنگز کو ہرائیں، ملتان سلطانز اسلام آباد یونائیٹڈ کو شکست دے، لاہور قلندرز کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو بھی بڑے مارجن سے شکست دے، پشاور زلمی کی ٹیم کراچی کنگز کو ہرائے، اسلام آباد یوئیٹڈ کی ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو ہرائے، لاہور قلندرز پشاور زلمی کو شکست دیدے اور پھر اس مرحلے کے آخری میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم کراچی کنگز کو ہرا دے۔
اس صورتحال میں اسلام آباد، ملتان اور کوئٹہ کی ٹیمیں ایلیمینیٹر مرحلے کیلئے کوالیفائی کر لیں گی جبکہ لاہور قلندرز اور پشاور زلمی کے 8,8 پوائنٹس ہو جائیں گے جس کے بعد دونوں ٹیموں کا نیٹ رن ریٹ دیکھا جائے گا۔
لاہور قلندرز کیلئے اگلے مرحلے میں جانے کی جو دوسری صورت نکلتی ہے اس کے مطابق لاہور، پشاور اور کوئٹہ کی ٹیموں کے 8، 8 پوائنٹس ہو جائیں گے اور ایسا اس وقت ہو گا جب ملتان سلطانز کراچی کنگز کو، پشاور کی ٹیم کوئٹہ کو، لاہور قلندرز کراچی کنگز کو، ملتان سلطانز اسلام آباد یونائیٹڈ، لاہور قلندرز کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو، کراچی کنگز پشاور زلمی کو، اسلام آباد یونائیٹڈ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو، لاہور قلندرز پشاور زلمی کو اور اسلام آباد یونائیٹڈ آخری میچ میں کراچی کنگز کو شکست دیدے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں