شیطان کیوں بھاگا؟


0

شیطان کیوں بھاگا؟

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک آدمی جنگل میں سفر پر نکلا تو سفر کے دوران ایک دن شیطان بھی اس کے ساتھ ہولیا راستے میں وہ نمازوں کا خیال نہ رکھتا تھا۔ ایک دن ایسا بھی آیا کہ وہ پانچوں میں سے ایک وقت بھی نماز کے لئے نہ کھڑا ہوا پھر جب رات ہوئی اور سونے کا انتظام کرنے لگا تو شیطان اس کے پاس سے بھاگنے لگا اس پر وہ آدمی جو شیطان کو انسان سمجھ رہا تھا اس کو روک کر کہنے لگا کہ سارا دن تو تم میرے ساتھ تھے اب جب تمہیں آرام کی ضرورت ہے تو تم مجھ سے بھاگ رہے ہو۔ اس کے جواب میں شیطان نے اسے اپنی حقیقت بتائی کہ میں شیطان ہوں میں نے ساری عمرعبادت کی ہے مگر ایک بار میں نے اللہ تعالیٰ کا فرمان نہ مانا اورتمہیں معلوم ہے اے ابن آدم کہ میں راندہ درگاہ ہوگیا اور مجھ پہ لعنت بھیج دی گئی مگر اے ابن آدم تم تو ایک چھوڑ پانچ دفعہ اللہ کی نافرمانی کے مرتکب ہوئے ہو تم نے تو نمازوں کو ترک کر کے انہیں جیسےغیراہم کردیا ہے اسی لئے مجھے ڈر ہے کہ اگر تم پر عذاب ہوا تو کہیں تمہارے ساتھ ہونے کی وجہ سے مجھ پر بھی عذاب نہ آئے اسی لئے میں اپنے آپکو بچا نے کے لئے تم سے بھاگ رہا ہوں۔

یہ واقعہ ہمیں سبق دیتا ہے کہ ہم دیکھ لیں کہ کہیں ہم نے تو یہ گناہ نہیں کردیا کہیں ہم نے بھی تو نمازوں کو چھوڑ نہیں دیا اور اس طرح اللہ کے حکم کی نافرمانی کے سبب اسکی ناراضگی تو مول نہیں لے رہے کیا ہم میں اتنی استطاعت ہے کہ اس کی ناراضگی سہہ سکیں؟ ایسا نہیں ہے اسی لئے ہمیں اپنی نمازوں کا خیال رکھنا چاہیئے اللہ جل شانہ ہم تمام مسلمانوں کو نماز پڑھنے کی توفیق اور اسکے ادا کرنے کی فکر عنایت فرمائے آمین ثمہ آمین۔
وَمَا عَلَینَا اِلَّا البَلَاغُ المُبِین

اور ہمارے ذمے تو صاف صاف پہنچا دینا ہے اور بس


Like it? Share with your friends!

0

What's Your Reaction?

hate hate
0
hate
confused confused
0
confused
fail fail
1
fail
fun fun
0
fun
geeky geeky
0
geeky
love love
5
love
lol lol
0
lol
omg omg
0
omg
win win
0
win

0 Comments

Your email address will not be published. Required fields are marked *

لطیفوں کی دنیا